Hassan Bukhari

ھم تو سمجھے تھے کہ

ھم تو سمجھے تھے کہ
محبت مر چکی ہو گی ۔۔۔
اور محبت مر گئی ہے اب
ناگاہ سرِ بازار آج
تیرے چاند چہرہ پر نگاہ پڑی۔۔۔
ھم تو سمجھے تھے
کہ محبت مر چکی ہو گی!