Hassan Bukhari

اور نقطہ ِ آغاز

اور نقطہ ِ آغاز
اور بسم اللہ کی آواز
اور جیت اور جہاں
اور ممکن اور امکاں
اور مکین اور مکان
اور زمین اور زمان
اور لہر اور ہر موج
اور ھماری اپنی فوج
اور میں، ھم سب ، تو
اور چہار سمت، ہر سو
اور صنفِ نازک اندام
اور خوبی اور نیک انجام
اور زمین اور چمن
اور پناہی صاحبِ زمن ع
اور امید کا جاری جہاں
اور سانسوں کا سیلِ رواں
اور شعور اور ضرور
اور مستی اور سرور
اور آنے والا کل
اور دعائے رحمت ہر پل
اور پنجاب اور بلوچ
اور سندھ و خیبر کی سوچ
اور گلگت اور کشمیر
اور وطن کی ایک زنجیر
اور نبی اور قران۔۔۔
اور وطن اور پاکستان
اور ستاروں سے آگے ۔۔۔
اور بہت کچھ۔ ۔۔۔